امریکہ اور اسرائیل ایران کی عسکری طاقت سے بے خبر ہیں: صہیونی نیوز ایجنسی




اس سائٹ نے مزید لکھا ہے کہ اب جبکہ ایران نے دوبارہ جوہری توانائی کی میشنیں فعال کر دی ہیں یہ حقیقت امریکہ اور اسرائیل کے لیے واضح نہیں ہو پائی ہے کہ ایران ایٹم بم بنانے کا ارادہ رکھتا ہے یا نہیں؟



خیبر صہیون تحقیقاتی ویب گاہ کے مطابق، صہیونی نیوز ایجنسی ڈبکا نے اپنی ایک تحریر میں لکھا ہے کہ امریکہ اور اسرائیل کو ایران کی عسکری طاقت کا بالکل اندازہ نہیں ہے۔ خاص طور پر یمن کے ڈرون کے ذریعے سعودی آئل ریفائنری ارامکو پر کئے گئے حملہ کے بعد یہ واضح ہو گیا کہ امریکہ و اسرائیل ایران کے دفاعی سسٹم کے بارے میں بےخبر ہیں۔
اس سائٹ نے مزید لکھا ہے کہ اب جبکہ ایران نے دوبارہ جوہری توانائی کی میشنیں فعال کر دی ہیں یہ حقیقت امریکہ اور اسرائیل کے لیے واضح نہیں ہو پائی ہے کہ ایران ایٹم بم بنانے کا ارادہ رکھتا ہے یا نہیں؟
اس کے باوجود امریکہ کے وزیر خارجہ اور صہیونی وزیر اعظم نے دو روز قبل فردو پلانٹ کے دوبارہ فعال کئے جانے پر اظہار تشویش کرتے ہوئے اعلان کیا ہے کہ ایران ایک سال کے عرصے میں ایٹم بم بنانے کی صلاحیت رکھتا ہے۔
اس اسرائیلی نیوز ایجنسی نے مزید کہا ہے کہ کوئی بھی سکیورٹی سروس یہ جاننے سے قاصر ہے کہ ایران اگلے مرحلے میں کیا منصوبہ پیش کرتا ہے اور کون سی جگہ ایٹمی انرجی کے ذخیرے کے لیے انتخاب کرتا ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ختم شد/۱۰۳