بایگانی‌های سیاست و معیشت - خیبر

زمرہ: سیاست و معیشت

اسرائیل کی نئی آرزو اور ہندوستان

ہندوستان کی طرف ہجرت کر کے آنے والے یہودی بغیر حکومتی قوانین کا لحاظ کئے اور بغیر نئی دہلی کی اجازت کے اپنے پیشے اور بزنس میں مشغول ہیں جبکہ دیکھا جائے توانکا اصل کام منشیات کی کھیتی خاص کر بھانگ کی پیداوار ہے جسے یہ لوگ تجارت کے پردے میں یورپین ممالک ، اور اسرائیل منتقل کرتے ہیں ۔

مشرقی ممالک کا عروج اور یورپی معیشت کا زوال

اگلے برسوں میں عالمی معیشت، بڑی معیشتوں کے زیر اثر، پہلے سے زيادہ مالیاتی دباؤ، عدم استحکام اور عدم اطمینان کا سامنا کرے گی۔ یہ واقعات و حوادث خاص طور پر چین اور بھارت کی معیشت کے زیر اثر نمودار ہونگے، کیونکہ ان ممالک کی معیشت خواہ اگر اگلے برسوں میں یہ رفتار کچھ کم بھی ہوجائے، دوسرے ممالک سے کہیں زيادہ تیز رفتاری سے ترقی کرے گی۔

امریکہ ہمیشہ سے زیادہ بےبس / طاقت کے اظہار کے لئے لفاظیوں کا سہارا

اگرچہ امریکی وزیر خارجہ نے قاہرہ میں اپنے خطاب کے دوران مشرق وسطی میں امریکی پالیسیوں پر روشنی ڈالتے ہوئے اپنی حکومت کو نہایت طاقتور قرار دینے کی کوشش کی لیکن ان کے کلام میں ایک ضمنی اعتراف جھلک رہا تھا اور وہ یہ کہ امریکی کردار کمزور پڑ گیا ہے اور یہ خطہ امریکہ کے ہاتھ سے نکل چکا ہے؛ یہاں تک کہ امریکہ کے اتحادی ممالک روس کی طرف مائل ہوئے ہیں اور ماسکو کے ساتھ عسکری اور سلامتی امور میں معاہدوں کے انعقاد کے درپے ہیں۔

“پاگل شخص” کا نظریہ کار آمد نہیں رہا

امریکی انتظامیہ کی جامع حکمت عملی کو دیکھا جائے تو لگتا ہے کہ وہ جان بوجھ کر "دیوانہ شخص" کے نظریے (MadMan Theory) پر کاربند ہیں، اس نظریئے پر پہلی بار کسینجر نے نکسن کے زمانے پر عمل کیا تھا [اور یہ نظریہ ٹم نفتالی (Tim Naftali) کے بقول اس وقت بھی ناکام ہوگیا تھا] اب سوال یہ ہے کہ یہ نظریہ اس زمانے میں کیوں احمقانہ ہے؟

ڈالر کے تسلط کا ممکنہ خاتمہ اور اس کے محرکات

امریکہ کی جانب سے اقتصادی پابندیوں کی بنا پر وجود میں آنے والی بین الاقوامی چپقلشیں اور واشنگٹن کی جانب سے تجارتی جنگ کے چھیڑے جانے کی بنا پر امریکہ کی اقتصادی پابندیوں کے مسائل سے جوجھتے ممالک اس بات پر مجبور ہو گئے کہ اقتصادی معاملات کی انجام دہی اور لین دین میں ڈالر کے علاوہ کسی اور طریقہ کار کو عمل میں لاتے ہوئے ڈالر کو کنارے لگا دیں ۔

امریکہ اور اسرائیل کی چودراہٹ کا دور ختم

یہودی ریاست کے انتہا پسند حکام پوری طرح اقتدار پر قابض ہیں، چنانچہ وہ امن و آشتی کے تمام راستے بند کردیتے ہیں، چنانچہ اب وہ جنگ سے عاجز آ چکے ہیں اور امن کے قیام کے سلسلے میں بھی ضعیف اور کمزور ہوچکے ہیں۔

ہندوستان و اسرائیل کے مابین باہمی تعاون پر ایک نظر

ہندوستان و اسرائیل کے باہمی تعلقات روز بروز بڑھتے جاتے ہیں یہاں تک کہ موجودہ وزیر اعظم نریندر مودی کے زمانے میں دونوں طرف ثقافتی، تعلیمی، سکیورٹی و سلامتی، علمی و دیگر میدانوں میں تعاون کو بے حد فروغ ملتا ہے اور انکے درمیان ایک ایسا تعلق استوار ہو جاتا ہے جسمیں جدائی و شگاف بہت ہی مشکل ہے۔

امریکی فوج کی طاقت کا سپنا چکنا چور

امریکیوں کو چاہئے کہ اس صورت حال کو تسلیم کریں کہ اس ملک کی فوجی قوت بہت زیادہ کمزور ہوچکی ہے اور امریکہ اور روس سمیت، امریکہ کے رقباء پوری قوت سے اپنی افواج کو جدیدترین ہتھیاروں سے لیس کررہے ہیں اور جدید اسلحے اور فوجی سازوسامان کو ترقی دے رہے ہیں۔

اسرائیل شدید ترین بحرانی صورتحال کا شکار

اسرائیل گذشتہ آٹھ عشروں کے دوران پہلی بار شدید ترین بحرانی صورتحال کا شکار ہو چکا ہے۔ اس وقت علاقائی دباو اور اندرونی سیاسی بحران کی وجہ سے اسرائیل سے یہودیوں کی نقل مکانی کی شدت میں بھی اضافہ ہو چکا ہے۔ بظاہر ایسا دکھائی دیتا ہے کہ بنجمن نیتن یاہو کی سیاسی زندگی اپنے اختتام کی جانب گامزن ہے۔

’بی ڈی ایس‘ کی مسلسل کامیابیاں اور صہیونی حکومت کی اس تحریک کو روکنے کی ناکام کوشش

اس تحریک کو ناکام بنانے اور اسے کمزور کرنے کے لئے صہیونی حکومت کی شکست نے اس حکومت کو ناامیدی کے ساتھ نفسیاتی جنگ کی طرف ڈھکیل دیا ہے اور اب قانونی اور اطلاعاتی جنگ کے ساتھ صہیونی حکومت نفسیاتی جنگ کے محاذ پر بھی اس سے مقابلہ کر رہی ہے۔
عنوان 1 سے 912345 » ...آخری »