بایگانی‌های منتخب - خیبر

زمرہ: منتخب

اسرائیل کی نئی آرزو اور ہندوستان

ہندوستان کی طرف ہجرت کر کے آنے والے یہودی بغیر حکومتی قوانین کا لحاظ کئے اور بغیر نئی دہلی کی اجازت کے اپنے پیشے اور بزنس میں مشغول ہیں جبکہ دیکھا جائے توانکا اصل کام منشیات کی کھیتی خاص کر بھانگ کی پیداوار ہے جسے یہ لوگ تجارت کے پردے میں یورپین ممالک ، اور اسرائیل منتقل کرتے ہیں ۔

مشرقی ممالک کا عروج اور یورپی معیشت کا زوال

اگلے برسوں میں عالمی معیشت، بڑی معیشتوں کے زیر اثر، پہلے سے زيادہ مالیاتی دباؤ، عدم استحکام اور عدم اطمینان کا سامنا کرے گی۔ یہ واقعات و حوادث خاص طور پر چین اور بھارت کی معیشت کے زیر اثر نمودار ہونگے، کیونکہ ان ممالک کی معیشت خواہ اگر اگلے برسوں میں یہ رفتار کچھ کم بھی ہوجائے، دوسرے ممالک سے کہیں زيادہ تیز رفتاری سے ترقی کرے گی۔

کیا عربوں کی پیشانی پر احمق کندہ ہے؟

صائب عریقات نے مصر کی ایک یونیورسٹی میں امریکی وزیر خارجہ کے اس بیان پر کی گرفت کی جس میں امریکی وزیر خارجہ نے کہا تھا کہ انکا ملک علاقے میں اچھائیوں اور نیکیوں کا سرچشمہ ہے، صائب عریقات نے امریکہ کے خطے میں خیرو برکت کے سرچشمے والی بات کا مذاق اڑاتے ہوئے کہا کہ کیا آپ کو عربوں کے ماتھوں پر احمق لکھا ہوا نظر آتا ہے؟

اسرائیل میں ہم جنس پرستی کا رواج

دلچسپ بات یہ ہے کہ طول تاریخ میں یہودیوں کی عملی زندگی پر اگر نگاہ دوڑائی جائے تو یہ حیوانی اور نازیبا عمل ان کی زندگیوں میں نظرنہیں آتا اسی وجہ سے یہودیوں کی مقدس کتاب "تلمود" میں اس موضوع کے سلسلے سے کوئی گفتگو نہیں ملتی

“پاگل شخص” کا نظریہ کار آمد نہیں رہا

امریکی انتظامیہ کی جامع حکمت عملی کو دیکھا جائے تو لگتا ہے کہ وہ جان بوجھ کر "دیوانہ شخص" کے نظریے (MadMan Theory) پر کاربند ہیں، اس نظریئے پر پہلی بار کسینجر نے نکسن کے زمانے پر عمل کیا تھا [اور یہ نظریہ ٹم نفتالی (Tim Naftali) کے بقول اس وقت بھی ناکام ہوگیا تھا] اب سوال یہ ہے کہ یہ نظریہ اس زمانے میں کیوں احمقانہ ہے؟

مکالمہ/امریکی سمجھتے تھے کہ انصار اللہ چھ مہینوں میں شکست کھائی گی/ الحدیدہ میں اسرائیلی اور فرانسیسی فوجیوں کی گرفتاری

سعودیوں اور اماراتیوں نے بہت سے امریکی، فرانسیسی، برطانوی، اسرائیلی اور مصری ہوابازوں کو بھرتی کرلیا ہے اور مصری ہواباز احتجاج کررہے ہیں کہ امریکی اور انگریز ہوابازوں کی تنخواہ 25000 ڈالر ہے، تو ان کی تنخواہ کیوں صرف 8000 ڈالر کیوں ہے؟

ویڈیو کلیپ/فلسطین کے ۲۰۱۸ میں قابل ذکر واقعات

2018 میں رونما ہونے والے فلسطین میں اہم واقعات پر ایک نظر

ڈالر کے تسلط کا ممکنہ خاتمہ اور اس کے محرکات

امریکہ کی جانب سے اقتصادی پابندیوں کی بنا پر وجود میں آنے والی بین الاقوامی چپقلشیں اور واشنگٹن کی جانب سے تجارتی جنگ کے چھیڑے جانے کی بنا پر امریکہ کی اقتصادی پابندیوں کے مسائل سے جوجھتے ممالک اس بات پر مجبور ہو گئے کہ اقتصادی معاملات کی انجام دہی اور لین دین میں ڈالر کے علاوہ کسی اور طریقہ کار کو عمل میں لاتے ہوئے ڈالر کو کنارے لگا دیں ۔

امریکہ اور اسرائیل کی چودراہٹ کا دور ختم

یہودی ریاست کے انتہا پسند حکام پوری طرح اقتدار پر قابض ہیں، چنانچہ وہ امن و آشتی کے تمام راستے بند کردیتے ہیں، چنانچہ اب وہ جنگ سے عاجز آ چکے ہیں اور امن کے قیام کے سلسلے میں بھی ضعیف اور کمزور ہوچکے ہیں۔

بین الاقوامی سطح پر امریکہ کے ہاتھوں انسانی حقوق کی پامالی

عجیب ہے کہ امریکہ اپنے ملک کے اندر قوانین منظور کرتا ہے اور انہیں بیرون ملک نافذ کرتا ہے جس کی وجہ وہ بیرونی ممالک بھی ہیں جو خدا کے احکام کو تو معطل کرسکتے ہیں لیکن امریکہ کے احکامات کی پیروی کو اپنی نجات کا وسیلہ سمجھتے ہیں۔
عنوان 1 سے 2912345 » 1020...آخری »