امریکہ کی جوہری معاہدے سے علیحدگی پر یہودیوں کا ’دیوار ندبہ‘ کے پاس شکرانہ تقریب کا انعقاد - خیبر

ایران کے ممکنہ حملوں کا یہودیوں میں انتہائی خوف و ہراس

امریکہ کی جوہری معاہدے سے علیحدگی پر یہودیوں کا ’دیوار ندبہ‘ کے پاس شکرانہ تقریب کا انعقاد

۲۲ اردیبهشت ۱۳۹۷ ۱۹:۰۰

سینکڑوں اسرائیلی باشندوں نے اپنے ربیوں کے ہمراہ دیوار ندبہ کے پاس حاضر ہو کر امریکہ کی ایران جوہری معاہدے سے علیحدگی پر بطور شکرانہ دعائیہ تقریب کا انعقاد کیا گیا ہے۔

خیبر صہیون تحقیقاتی ویب گاہ کی رپورٹ کے مطابق، صہیونی یہودیوں کے درمیان ایران کے حملے کا خوف اس قدر شدید ہے کہ سینکڑوں اسرائیلی باشندے گزشتہ روز جمعہ کو اپنے ربیوں (دینی رہنماؤں) کے ہمراہ ’دیوار ندبہ‘ کے پاس جمع ہوئے اور ایک دعائیہ تقریب کا انعقاد کر کے ایران کے خلاف امریکی اقدام اور انہیں امریکہ کی طرف سے تحفظ فراہم کئے جانے پر انہوں نے خدا کا شکریہ ادا کیا!۔
مصر کی خبررساں ایجنسی صدی البلد کے مطابق صہیونیوں نے اس تقریب میں نماز شکرانہ ادا کی اور اس معجزے پر خدا کا شکریہ ادا کیا۔
رپورٹ کے مطابق، شکرانہ کی یہ تقریب یہودیوں کے لیے اللہ کی طرف سے دکھلائے گئے تین معجزوں؛ امریکہ کی ایران جوہری معاہدے سے علیحدگی، امریکی سفارتخانے کی قدس منتقلی اور شام میں اسرائیل کی کامیابی، کے بعد منعقد کی گئی ہے۔
اسرائیلی ربی نے نامہ نگار سے گفتگو میں کہا: ہم یہاں پر اکٹھا ہوئے ہیں تاکہ اللہ کا شکر ادا کریں کہ اس نے ہمیں ایران کے حملوں سے محفوظ رکھا ہے اور ہماری مدد کی ہے کہ ہم اس عظیم بحران سے بچ سکیں جس میں ایرانی ہمیں گرفتار کرنا چاہتے تھے۔


خیال رہے کہ دیوار ندبہ مسجد الاقصیٰ کی مغربی دیوار ہے جو یہودیوں کے نزدیک مقدس ترین مقام ہے اور وہ قائل ہیں کہ ہیکل سلیمانی اس مقام پر واقع تھا۔

منبع: http://www.farsnews.com/news/13970222000521

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ختم شد/خ/ب/۲۰۱/ ۱۰۰۰۳

  • facebook
  • googleplus
  • twitter
  • linkedin
لینک خبر : https://kheybar.net/?p=2749

تبصرہ کریں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے