برازیل کا اپنا سفارتخانہ بیت المقدس منتقل کرنے کا اعلان فلسطینیوں سے دشمنی کے مترادف - خیبر

برازیل کا اپنا سفارتخانہ بیت المقدس منتقل کرنے کا اعلان فلسطینیوں سے دشمنی کے مترادف

03 نومبر 2018 22:00

اسلامی تحریک مزاحمت “حماس” نے برازیل کی جانب سے اسرائیل میں قائم اپنا سفارت خانہ مقبوضہ بیت المقدس منتقل کرنے کے اعلان کی شدید الفاظ میں‌ مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ برازیل کے فیصلے کو فلسطینی قوم سے دشمنی کے مترادف قرار دیا ہے۔

خیبر صہیون تحقیقاتی ویب گاہ کے مطابق، حماس کے ترجمان سامی ابو زھری نے ایک بیان میں کہا کہ برازیلی صدر جائر بولسونارو کا تل ابیب میں قائم اپنا سفارت خانہ مقبوضہ بیت المقدس منتقل کرنے کا اعلان فلسطینیوں سے دشمنی کے مترادف ہے۔

یہ اعلان امریکا اور صہیونی لابی کے پروپیگنڈے کا نتیجہ ہوسکتا ہے۔ ترجمان نے برازیلی حکومت سے مطالبہ کیا کہ وہ اپنا سفارت خانہ القدس منتقل کرنے کا اعلان واپس لے۔

خیال رہے کہ برازیل کے صدر ژیئر بولسونارو نے اعلان کیا ہے کہ ان کا ملک اسرائیل میں اپنے سفارت خانے کو جلد ہی بیت المقدس منتقل کر دے گا۔

یہ اعلان بولسونارو کی انتخابات میں کامیابی کے کچھ ہی عرصے بعد سامنے آیا ہے۔

جمعرات کی شام اپنی ٹوئیٹ میں ۶۳ سالہ بولسونارو نے کہا کہ “جیسا کہ ہم نے انتخابی مہم کے دوران اعلان کیا تھا “اب ہم برازیل کے سفارت خانے کو تل ابیب سے بیت المقدس منتقل کرنے کا ارادہ رکھتے ہیں”۔ انہوں نے مزید کہا کہ “اسرائیل خود مختاری اور سیادت کی حامل ریاست ہے اور ہم پر لازم ہے کہ اس امر کا پورا احترام کریں”۔

اس اعلان پر عمل درامد کی صورت میں امریکا اور گوئٹے مالا کے بعد برازیل وہ تیسرا ملک ہو گا جو اپنا سفارت خانہ بیت المقدس منتقل کرے گا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ختم شد؍خ؍۱۰۰۰۳

  • facebook
  • googleplus
  • twitter
  • linkedin
لینک خبر : https://kheybar.net/?p=14204

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے