رواں سال میں صہیونی طفل کش رژیم کے ہاتھوں ۵۲ فلسطینی بچے شہید - خیبر

رواں سال میں صہیونی طفل کش رژیم کے ہاتھوں ۵۲ فلسطینی بچے شہید

20 نومبر 2018 11:00

حقوق اطفال کی مدافع بین الاقوامی تنظیم نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ صہیونی ریاست نے گزشتہ ایک سال کے دوران غزہ کی پٹی میں ۵۲ فلسطینی معصوم بچوں سے ان کی زندگیاں چھین لی ہیں۔

خیبر صہیون تحقیقاتی ویب گاہ کے مطابق، اناٹولیا نیوز ایجنسی نے خبر دی ہے کہ حقوق اطفال کی مدافع بین الاقوامی تنظیم نے پیر کے روز اپنی شائع کردہ رپورٹ میں کہا ہے کہ صہیونی ریاست نے رواں سال ۲۰۱۸ میں ۵۲ فلسطینی بچوں کو شہید کیا ہے۔
اس تنظیم کی جانب سے جاری کئے گئے بیان میں کہا گیا ہے کہ اسرائیل نے غزہ کی پٹی میں ۴۶ فلسطینی بچوں اور غرب اردن میں ۶ بچوں کو براہ راست گولیوں یا فضائی حملوں سے شہید کیا ہے۔
اس رپورٹ کے مطابق سن ۲۰۰۰ سے اب تک ۲۰۷۰ فلسطینی بچے صہیونی ریاست کے ظلم و تشدد کی نذر ہو گئے ہیں۔
اس رپورٹ میں اس بات کی طرف بھی اشارہ کیا گیا ہے کہ صہیونی ریاست سالانہ ۵۰۰ سے ۷۰۰ بچوں کو فوجی عدالت کے کٹہرے میں کھڑا کرتی ہے جبکہ تقریبا ۳۵۰ بچے اسرائیلی عقوبت خانوں میں اپنی بے گناہی کی سزا بھگت رہے ہیں۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ختم شد/خ/۱۰۰۰۳

  • facebook
  • googleplus
  • twitter
  • linkedin
لینک خبر : https://kheybar.net/?p=15227

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے