عرب ریاستوں کے اسرائیل کے ساتھ تعلقات فلسطینی قوم کی پیٹھ میں خنجر گھونپنے کے مترادف: حماس - خیبر

عرب ریاستوں کے اسرائیل کے ساتھ تعلقات فلسطینی قوم کی پیٹھ میں خنجر گھونپنے کے مترادف: حماس

28 اکتوبر 2018 10:47

اسلامی تحریک مزاحمت “حماس” نے اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاھو کے اعلیٰ اختیاراتی وفد کے دورہ عمان کی شدید مذمت کی ہے اور کہا ہے کہ کسی بھی عرب ریاست کے اسرائیل کے ساتھ تعلقات فلسطینی قوم کی پیٹھ میں خنجر گھوپنے کے مترادف ہے۔

خیبر صہیون تحقیقاتی ویب گاہ کے مطابق، اسلامی تحریک مزاحمت ‘حماس’ کی طرف سے جاری ہونے والے ایک بیان میں کہا گیا ہے کہ اسرائیل اور عمان کے درمیان جس نوعیت اور سطح کے تعلقات کے قیام کی بھی کوشش کی جا رہی ہے وہ فلسطینی قوم کے لیے قابل قبول نہیں۔

بیان میں مزید کہا گیا ہے کہ اسرائیل اور عمان کے درمیان دوستانہ مراسم کے قیام کی کوششوں کے نتائج انتہائی خطرناک ہوں گے اور ان کوششوں کے اثرات فلسطینی قوم کے دیرینہ حقوق بالخصوص حق خود ارادیت کے لیے جاری جدو جہد پر مرتب ہوں گے۔

بیان میں خلیجی ریاست عمان سے بھی مطالبہ کیا گیا ہے وہ اسرائیل کے ساتھ دوستانہ تعلقات کے قیام کی کوششوں کو مسترد کردے اور کسی اسرائیلی لیڈر کو اپنے ہاں مدعو نہ کرے۔

حماس کا کہنا ہے کہ اسرائیل اس وقت اپنے جرائم کی وجہ سے عالمی سطح پر تنہائی کا شکار ہے اور اپنی عالمی تنہائی کو ختم کرنے کے لیے عرب ممالک کے قریب ہونے کی کوشش کررہا ہے۔ کسی عرب ملک کا اسرائیل کے ساتھ تعلق استوار کرنا فلسطینی قوم کی پیٹھ میں خنجر گھونپنے کے مترادف ہوگا۔

خیال رہے کہ جمعرات کے روز اسرائیلی وزیراعظم بنجمن نیتن یاھو نے ایک اعلیٰ اختیاراتی وفد کے ساتھ عمان کے دارالحکومت مسقط کا دورہ کیا جہاں انہوں نے اس ملک کے سلطان القابوس بن سعید سے ملاقات اور گفتگو کی۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ختم شد/خ/۱۰۰۰۳

  • facebook
  • googleplus
  • twitter
  • linkedin
لینک خبر : https://kheybar.net/?p=13972

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے