واپسی مارچ ریلیوں پر اندھا دھند فائرنگ، ۳ فلسطینی شہید - خیبر

واپسی مارچ ریلیوں پر اندھا دھند فائرنگ، ۳ فلسطینی شہید

15 ستمبر 2018 14:01

صہیونی فوجیوں نے جمعہ کے روز فلسطین کے علاقے غزہ کی سرحد پر مختلف ’حق واپسی‘ مظاہروں میں شریک فلسطینیوں پر اندھا دھند گولیاں برسائیں جس کے نتیجے میں کم سےکم تین فلسطینی شہید اور ۲۵۰ زخمی ہوگئے۔

خیبر صہیون تحقیقاتی ویب گاہ کے مطابق، فلسطینی وزارت داخلہ کے ترجمان ڈاکٹر اشرف القدرہ نے بتایا کہ ۱۲ سالہ لڑکے شادی عبدل آل کو غزہ کے شمالی حصے میں گولی ماری گئی، جب کہ ۲۱ سالہ حانی افنا اور محمد شکور کو جنوبی غزہ اور البرج کے ساحلی علاقوں میں دو الگ الگ واقعات میں گولیاں مار کر شہید کیا گیا۔

حماس کی وزارت صحت کے بیان کے مطابق سرحد کے ساتھ مختلف علاقوں میں فلسطینیوں کے احتجاج کے دوران اسرائیلی فوجیوں کی فائرنگ سے کم از کم ۲۴۸ افراد زخمی بھی ہوئے۔

غزہ میں سیکیورٹی ذرائع نے بتایا ہے کہ غزہ شہر کے قریب حماس کی ایک چوکی پر ایک اسرائیلی ٹینک نے چڑھائی کر دی۔

خیال رہے کہ بڑے پیمانے پر احتجاج اور اسرائیلی سیکیورٹی فورسز کے ساتھ جھڑپوں کا یہ نیا سلسلہ ۳۰ مارچ سے شروع ہوا تھا اور تب سے ہر جمعے کو مظاہرے کیے جاری ہیں۔ اس عرصے کے دوران اسرائیلی فائرنگ سے کم ازکم ۱۸۴ نہتے فلسطینی مارے جا چکے ہیں۔

مرکز اطلاعات فلسطین

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ختم شد/خ/۱۰۰۰۳

  • facebook
  • googleplus
  • twitter
  • linkedin
لینک خبر : https://kheybar.net/?p=11871

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے