عرب ممالک اسرائیلی سفیروں کو نکال باہر کریں: حماس




اسلامی تحریک مزاحمت کے رہنما نے اسلامی ممالک سے مطالبہ کیا ہے کہ اسرائیل کے ساتھ تعلقات معمول پر لانے کے بجائے اس کے سفیروں کو اپنے ملکوں سے باہر کریں۔



خیبر صہیون تحقیقاتی ویب گاہ کے مطابق، اسلامی تحریک مزاحمت “حماس” کے سیاسی شعبہ کے رہنما نے اسلامی ممالک سے مطالبہ کیا ہےکہ وہ صہیونی سفیروں کو اپنے ملکوں سے نکال باہر کریں۔

“خلیل حیہ” نے گزشتہ روز واپسی مارچ ریلیوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا: ان احتجاجی مظاہروں میں فلسطینیوں کی بھرپور شرکت مزاحمت کے راستے کو جاری رکھنے پر تاکید کی علامت ہے اور اس بات کی دلیل ہے کہ ملت فلسطین نہ شکست کھائے گی اور نہ تسلیم ہو گی۔

انہوں نے مزید کہا: ملت فلسطین دشمن کے مقابلے میں بھرپور اتحاد اور یکجہتی کے ساتھ ڈٹی ہوئی ہے۔

حماس کے رہنما نے کہا: فلسطینی اتھارٹی کی سیکورٹی سروس کا صہیونی دشمن کے ساتھ تعاون، مزاحمت کی پشت پر خنجر گھونپنے کے مترادف ہے جبکہ بعض عرب ریاستوں کا اسرائیل کے ساتھ تعلقات کو معمول پر لانے کی کوشش بھی ملت فلسطین کے ساتھ خیانت ہے۔

انہوں نے آسٹریلیا کی جانب سے اپنے سفارتخانہ کو قدس منتقل کرنے کے اعلان کی بھی مذمت کرتے ہوئے اسے ناقابل قبول اقدام قرار دیا۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ختم شد/خ/۱۰۰۰۳