فلسطینی اراضی کو ہتھیانہ نیتن یاہو کا یہودیوں کو خوش کرنے کا نیا حربہ




نیتن یاھو نے یہودیوں کو خوش رکھنے اور ان کی رضامندی حاصل کرنے کے لیے فلسطینیوں کی اراضی ہتھیانے اور یہودی آباد کاری کو فروغ دینے کی سازشیں شروع کی ہیں۔



خیبر صہیون تحقیقاتی ویب گاہ کے مطابق، اسرائیل کے عبرانی ذرائع ابلاغ کے مطابق وزیراعظم بنجمن نیتن یاھو نے یہودیوں کو خوش رکھنے اور ان کی رضامندی حاصل کرنے کے لیے فلسطینیوں کی اراضی ہتھیانے اور یہودی آباد کاری کو فروغ دینے کی سازشیں شروع کی ہیں۔

اسرائیلی ٹی وی چینل ۷ کی رپورٹ کےمطابق نیتن یاھو آج بدھ کو غرب اردن کی یہودی قیادت سے ملاقات کریں گے۔ اس ملاقات کامقصد یہودی آبادکاروں کو خوش رکھنے کے لیے ان کے مطالبات پر غور کرنا ہے۔

عبرانی ٹی وی چینل کے مطابق یہ ملاقات ایک ایسے وقت میں‌ہو رہی ہے جب دوسری جانب گذشتہ ہفتے یہودی آبادکاروں‌نے غرب اردن میں تعمیراتی منصوبوں میں سستی برتنے پرحکومت کے خلاف احتجاج کیا تھا۔
آج کے روز ہونے والی ملاقات میں نیتن یاھو صہیونی قیادت کو غرب اردن میں‌یہودی آباد کاری کرنے اور فلسطینیوں کی مزید اراضی ہتھیانے کی یقین دہانی کرائیں گے۔

ٹی وی چینل کی رپورٹ میں‌ بتایا گیاہے کہ نیتن یاھو یہودی آباد کاروں کو کالونیوں میں مزید سہولیات فراہم کرنے اور ان کی تجاوزیر پرغور کرنے کی یقین دہانی کرائیں‌گے۔

خیال رہےکہ نیتن یاھو  نے دو روز قبل ازوقت انتخابات کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا کہ وہ جلد ہی پارلیمنٹ تحلیل کردیں گے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ختم شد؍خ؍۱۰۰۰۳