فلسطینی عوام عنقریب فیصلہ کن کامیابی سے ہمکنار ہوں گے: رہبر انقلاب




رہبرانقلاب اسلامی آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای نے فرمایا ہے کہ فلسطین پوری قوت کے ساتھ ڈٹا ہوا ہے فلسطینی عوام عنقریب فیصلہ کن کامیابی سے ہمکنار ہوں گے۔



خیبر صہیون تحقیقاتی ویب گاہ کے مطابق، فلسطینی تنظیم جہاد اسلامی کے سربراہ زیادہ نخالہ سے ملاقات میں رہبرانقلاب اسلامی آیت اللہ العظمی سید علی خامنہ ای نے فرمایا کہ مسئلہ فلسطین میں توازن کا معاملہ پوری طرح روشن ہے۔ آپ نے فرمایا کہ اگر آپ مزاحمت دکھائیں گے تو کامیابی آپ کے قدم چومے گی بصورت دیگر ناکامی کا منھ دیکھنا پڑے گا۔

رہبرانقلاب اسلامی نے فرمایا کہ خدا کے فضل وکرم سے فلسطین کے عوام تاحال صہیونی ریاست کا مقابلہ کر رہے ہیں اور تحریک مزاحمت کامیاب رہی ہے۔ آپ نے فرمایا کہ فلسطینی عوام اور تحریک مزاحمت کی اصل کامیابی یہ ہے کہ وہ غاصب صہیونی ریاست جسے عرب فوجیں مل کر شکست نہیں دے سکیں، اسے انہوں نے سخت ہزیمت سے دوچار کیا ہے اور خدا کے حکم سے اس سے بڑی کامیابی فلسطینیوں کو نصب ہوگی۔

رہبرانقلاب اسلامی نے فرمایا کہ صہیونی ریاست مزاحمتی تنظیموں کے خلاف پہلی دو جنگوں میں، بائیس روز اور پھر آٹھ روز کے بعد جنگ بندی کی اپیل کرنے لگی تھی جبکہ حالیہ جنگ میں تو محض اڑتالیس گھنٹے کے بعد ہی اس نے جنگ بندی کا مطالبہ کر دیا اور یہ غاصب صہیونی ریاست کے گھٹنے ٹیکنے کے مترادف ہے۔

آپ نے حالیہ برسوں کے دوران فلسطینی عوام کی پے در پے فتح کو ان کی استقامت اور مزاحمت کا نتیجہ قراردیا اورفرمایا کہ جب تک فلسطینی عوام کی تحریک مزاحمت جاری ہے، صیہونی حکومت کے زوال کا سلسلہ بھی اسی طرح جاری رہے گا۔

رہبرانقلاب اسلامی نے ایران کے خلاف سامراجی طاقتوں کے بے پناہ دباؤ کی جانب اشارہ کرتے ہوئے فرمایا کہ یہ دباؤ بھی ہمیں فلسطین کی حمایت چھوڑنے پر مجبور نہیں کرسکتا ہے۔آپ نے فرمایا کہ فلسطین کی حمایت اسلامی جمہوریہ ایران کا الہی، مذہبی اور عقلانی فریضہ ہے اور ہم اس سے ہرگز دستبردار نہیں ہوں گے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ختم شد؍خ؍۱۰۰۰۳