چھیالیسویں واپسی مارچ میں ۲ فلسطینی شہید، ۱۷ زخمی




مشرقی غزہ میں ہونے والے مظاہروں کے دوران اسرائیلی فوج نے مظاہرین پر سیدھی گولیاں چلائیں، آنسوگیس کی شیلنگ کی اور دھاتی گولیوں کا استعمال کیا جس کے نتیجے میں ۲ فلسطینی شہید اور ۱۷ زخمی ہوئے ہیں۔



خیبر صہیون تحقیقاتی ویب گاہ کے مطابق، غزہ پٹی کی مشرقی سرحد پر جمعہ کے روز ہونے والے ہفتہ وار پرامن مظاہروں‌ کے دوران قابض صہیونی فوج نے طاقت کا وحشیانہ استعمال کرکے دو فلسطینیوں‌ کو شہید اور ۱۷ کو زخمی کر دیا۔ شہید ہونے والوں میں ایک ۱۴ سالہ بچہ بھی شامل ہے۔

قابض فوج کی فائرنگ سے ۱۷ سالہ حمزہ محمد اشتیوی کی شہادت کی بھی تصدیق کی گئی ہے جسے شدید زخمی حالت میں گذشتہ شام اسپتال منتقل کیا گیا تھا۔

مشرقی غزہ میں ہونے والے مظاہروں کے دوران اسرائیلی فوج نے مظاہرین پر سیدھی گولیاں چلائیں، آنسوگیس کی شیلنگ کی اور دھاتی گولیوں کا استعمال کیا جس کے نتیجے میں‌۱۷ فلسطینی زخمی ہوگئے۔ قابض فوج کی فائرنگ اور آنسوگیس کی شیلنگ کے نتیجے میں سیکڑوں افراد دم گھٹنے سے بھی متاثر ہوئے۔ زخمیوں‌ میں سے تین کی حالت خطرے میں ہے اور انہیں اسپتالوں میں منتقل کر دیا گیا ہے۔

خیال رہے کہ گذشتہ برس ۳۰ مارچ سے غزہ کی پٹی میں فلسطینی شہری پر امن احتجاج کر رہے ہیں۔
palinfo.com

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ختم شد؍خ؍۱۰۰۰۳