صہیونی فوج کی القنیطرہ میں ہسپتال پر گولہ باری




شام کے سرکاری ذرائع ابلاغ نے دعویٰ کیا ہے کہ اسرائیلی جنگی طیاروں نے لبنان کے سرحدی علاقے القنیطرہ میں واقع ہسپتال پر بمباری کی ہے تاہم اس اس بمباری کے نتیجے میں کسی جانی نقصان کی اطلاع نہیں ہے جبکہ املاک کو کافی نقصان پہنچا ہے۔



خیبر صہیون تحقیقاتی ویب گاہ: شامی خبر رساں ادارے’سانا’ کے مطابق اسرائیل نے ٹینکوں سے القنیطرہ میں تباہ شدہ اسپتال پر گولے داغے۔ اس کے علاوہ جباثا الخشب ، تل الدرعیہ اور دیگر مقامات پر بھی ٹینکوں سے گولہ باری کے ساتھ جنگی طیاروں سے بھی بمباری کی گئی۔ اس بمباری کے نتیجے میں املاک کو نقصان پہنچا ہے تاہم کسی قسم کے جانی نقصان کی تصدیق نہیں ہوئی۔

‘سانا’ نے عسکری ذریعے کے حوالے سے بتایا کہ اسرائیلی فوج نے وادی گولان کی سرحد کے قریب متعدد دیہات پر بھی گولہ باری کی۔

سرحدی علاقے درایہ میں متعدد حملے کئے گئے۔ شام میں انسانی حقوق کی صورت حال پر نظر رکھنے والے ادارے ‘آبزر ویٹری’ کے ڈائریکٹر رامی عبدالرحمان نے بتایا کہ اسرائیلی فوج نے القنیطرہ میں شامی فوج کی متعدد  تنصیبات جن میں ایک رصدگاہ بھی شامل ہے پر گولہ باری کی جس کےنتیجے میں متعدد افراد زخمی ہوئے ہیں۔ انہوں‌نے حملے کا ہدف بننے والی تنصیبات کی تفصیلات نہیں بتائیں۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ختم شد؍خ؍۱۰۰۰۳