عرب ممالک کے ساتھ قربتیں اسرائیل کو نابودی سے نہیں بچا سکتیں




اسلامی تحریک مزاحمت ‘حماس’ کے غزہ کی پٹی میں سیاسی شعبے کے سربراہ یحییٰ السنوار نے کہا ہے کہ اسرائیلی دشمن کا زوال ناگزیر ہے اور عرب ممالک کی طرف سے اس کے ساتھ دوستی کی پنگیں‌بڑھانے کی دوڑ صہیونیوں کی ڈوبتی نیا کو نہیں‌ بچا سکتی۔



خیبر صہیون تحقیقاتی ویب گاہ کے مطابق، “اسرائیل سے دوستی خیانت” کے عنوان سے سوشل میڈیا پر جاری مہم کا جواب دیتے ہوئے السنوار نے کہا کہ غاصب دشمن اس غلط فہمی میں نہ رہے کہ وہ بعض عرب ملکوں کے ساتھ قربت پیدا کرکے خود کو تباہی سے بچا لے گا۔ صہیونی دشمن کا زوال قریب ہے۔

ادھر حماس کے عسکری ونگ عزالدین القسام بریگیڈ کے ترجمان ابو عبیدہ نے مسلمہ امہ کے شرفاء پر زور دیا کہ وہ اسرائیل کے ساتھ دوستی کے خلاف جاری سوشل میڈیا مہم میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں۔ انہوں نے کہا کہ فلسطینی قوم کو عالم اسلام کی طرف سے معاونت کے ساتھ فلسطینی مزاحمت کو بھی مادی، سیاسی اور ثقافتی مدد کی ضرورت ہے۔

ابو عبیدہ کا کہنا تھا کہ مزاحمت فلسطینی تنظیموں ہی کا نہیں بلکہ پوری قوم کا دشمن کے غاصبانہ تسلط سے آزادی کا ذریعہ ہے۔ فلسطینی قوم مزاحمت ہی کے ذریعے وطن کو آزاد کرانے اور مقدسات کو دشمن کے ناپاک پنجوں سے نجات دلانے میں کامیاب ہوں‌ گے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ختم شد؍خ؍۱۰۰۰۳