صہیونی وزیر اعظم نے غزہ پر وسیع حملے جاری رکھنے کا حکم دے دیا




صہیونی وزیر اعظم نے غزہ کی پٹی پر بکتر بند گاڑیاں اور میزائل سیسٹم نصب کرنے کا حکم دیتے ہوئے اعلان کیا ہے کہ غزہ پر وسیع حملے جاری رہیں گے۔



خیبر صہیون تحقیقاتی ویب گاہ کے مطابق، نیتن یاہو نے اتوار کے روز صہیونی فوج کو غزہ پر حملے جاری رکھنے کے احکامات صادر کر دیئے ہیں۔
انہوں نے ٹویٹر پر لکھا ہے: ’’میں نے فوج کو حکم دیا ہے کہ غزہ کی پٹی میں دھشتگرد عناصر کے ٹھکانوں پر وسیع حملے کئے جائیں۔ میں نے غزہ کی پٹی کے اطراف میں توپخانوں کو بھی نصب کرنے کا حکم دے دیا ہے‘‘۔
نیتن یاہو نے مزید دعویٰ کیا ہے کہ حماس اور جہاد اسلامی تنظمیں غزہ پر حملوں کا باعث بن رہی ہیں۔ لہذا انہیں بھاری قیمت چکانا پڑے گی۔
خیال رہے کہ صہیونی فوج نے گذشتہ ۲۴ گھنٹوں کے دوران دو سو سے زیادہ مرتبہ غزہ کی پٹی کو اپنے فضائی حملوں کا نشانہ بنایا۔
فلسطین کی وزارت صحت کے مطابق ان حملوں میں کم سے کم ۷ فلسطینی شہید اور متعدد زخمی ہوئے ہیں۔
دوسری جانب مزاحمتی دھڑوں نے جوابی کاروائی کرتے ہوئے درجنوں میزائل اور راکٹ فائر کئے جس کے نتیجے میں اسرائیل کے شہروں میں خطرے کے سائرن بھجنے لگے اور لوگوں میں کھلبلی مچ گئی۔ جبکہ دسیوں صہیونوں کے مرنے اور زخمی ہونے کی خبریں بھی ہیں۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ختم شد؍۱۰۳