حماس کی قیادت کا دورہ تہران/ متکبر طاقتوں کے خلاف جنگ میں ایران اور حماس متحد





خیبر صہیون تحقیقاتی ویب گاہ کے مطابق، حماس کے سیاسی شعبے کے نائب صدر صالح العاروری نے ایک اعلیٰ اختیاراتی وفد کے ہمراہ اپنے ایران کے دورے پر اتوار کو تہران میں ایرانی اسٹرٹیجک کونسل کے چیئرمین کمال خرازی سے ملاقات کی۔ اس موقع پر انہوں نے کہا کہ سنچری ڈیل کا امریکی مقصد صہیونی ریاست کے مفادات کا تحفظ اور خطے کے اپنے اتحادیوں کی معاونت کرنا ہے۔ یہ سازش فلسطینی قوم کے حقوق کی قیمت پر آگے بڑھانے کی کوشش کی جا رہی ہے مگر فلسطینی اپنے حقوق پر کوئی سودہ بازی قبول نہیں کریں گے۔
حماس نے نائب صدر کا کہنا تھا کہ صہیونی ریاست اور متکبر طاقتوں کے خلاف جنگ میں حماس اور ایران ایک ہی ٹریک پرچل رہے ہیں۔ ایران اور حماس کو وعدہ خداوندی پر ایمان ہے۔ ہم نے فلسطین اور القدس کی آزادی کے لیے ہزاروں افراد کی جانیں قربان کی ہیں۔
حماس کے وفد اور ایرانی عہدیدار کمال خرازی کے درمیان ہونے والی ملاقات میں قضیہ فلسطین کےحوالے سے تفصیلی اور گہرائی کے ساتھ بات چیت کی گئی۔ اس کےعلاوہ دونوں ملکوں کی قیادت میں خطے اور عالمی صورت حال پربھی تبادلہ خیال کیا گیا۔ بیت المقدس اور مسجد اقصیٰ کے صہیونی ریشہ دوانیوں پر بات چیت کی گئی۔
حماس کے وفد نے ایرانی قیادت کو یقین دلایا کہ حماس ہر طرح کے حالات، چیلنجز اور دبائو کا مقابلہ کرتے ہوئے فلسطینی قوم کے حقوق ختم کرنے کی سازشوں کا مقابلہ کرے گی۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ختم شد/۱۰۳