غزہ میں “لبیک یا مسجد الاقصیٰ” کے زیر عنوان احتجاجی جلوس، صہیونی فوج کی فائرنگ سے ۱۲۰ فلسطینی زخمی




خیبر صہیون تحقیقاتی سینٹر کے مطابق،غزہ کی پٹی میں گزشتہ روز جمعہ کو “لبیک یا مسجد الاقصیٰ” کے زیر عنوان نکالی گئی احتجاجی ریلی پر صہیونی فوج نے اندھا دھند فائرنگ کر کے ۱۲۰ فلسطینیوں کو زخمی کر دیا ہے۔ فلسطین کے قومی ہائی کمیشن کی جانب سے جاری کئے گئے بیان میں کہا گیا […]



خیبر صہیون تحقیقاتی سینٹر کے مطابق،غزہ کی پٹی میں گزشتہ روز جمعہ کو “لبیک یا مسجد الاقصیٰ” کے زیر عنوان نکالی گئی احتجاجی ریلی پر صہیونی فوج نے اندھا دھند فائرنگ کر کے ۱۲۰ فلسطینیوں کو زخمی کر دیا ہے۔
فلسطین کے قومی ہائی کمیشن کی جانب سے جاری کئے گئے بیان میں کہا گیا ہے کہ گزشتہ روز جمعہ کو “لبیک یا مسجد الاقصیٰ” کے زیر عنوان نکالی گئی احتجاجی ریلی کا مقصد یہودیوں کی جانب سے ہونے والی مسلسل مسجد الاقصیٰ کی بے حرمتیوں کی مذمت کرنا تھا۔
بیانیہ میں آیا ہے کہ مسجدا الاقصیٰ کی آتش زدگی کی پچاسویں برسی کے موقع پر اس جعمہ کی واپسی مارچ میں “لبیک یا مسجد الاقصیٰ” کا نعرہ لگایا گیا۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ اس احتجاجی ریلی میں فلسطینیوں نے کثیر تعداد میں شرکت کر کے یہ ثابت کر دیا کہ ملت فلسطین دشمن کے پروپیگنڈوں کے مقابلے میں ڈٹی ہوئی ہے۔
فلسطین کی وزارت صحت کے مطابق، اس احتجاجی ریلی پر صہیونی فوج کی جانب سے کی گئی اندھا دھند فائرنگ میں ۱۲۰ فلسطینی زخمی ہوئے ہیں۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ختم شد/۱۰۳