انگلیائی عیسائیوں کا اسرائیل پر اقتصادی پابندی لگائے جانے کا مطالبہ




انگلیائی کرسچن ایسوسی ایشن (ACSA) نے اسرائیل پر اقتصادی پابندیوں کا مطالبہ کر دیا ہے۔



خیبر صہیون تحقیقاتی ویب گاہ کے مطابق، جنوبی افریقہ میں انگلیائی کرسچن ایسوسی ایشن (ACSA) نے اسرائیل پر اقتصادی پابندیوں کا مطالبہ کر دیا ہے۔ ۵ ستمبر ، ۲۰۱۹ کو جاری کردہ بیان میں ، جنوبی افریقہ میں نسل پرستانہ نظام کی اسرائیل کی جانب سے حمایت کا حوالہ بھی دیا گیا تھا، اور یہ کہ صہیونی ریاست نے آخری لمحے تک اس نظام کی حمایت کی ہے۔
انگلیائی کرسچن ایسوسی ایشن کے ساڑھے چار لاکھ سے زیادہ ممبران ہیں۔ اس انجمن کے جنوبی افریقہ ، نامیبیا ، موزمبیق اور انگولا سمیت ممبران بھی ہیں۔ اسرائیل پر پابندیوں کا مطالبہ کرنے والوں میں نامیبیا کے بزرگ عیسائی رہنما لیوک پاٹو (Luke Pato ) بھی شامل ہیں۔
فلسطین کے بزرگ رہنما عطاء اللہ حنا نے کہا: “صہیونی، عیسائی مظاہروں کی آواز کو نہ سنے جانے اور اسرائیلی مظالم کے خلاف عیسائی مقامات کو غیر موثر بنانے کی کوشش کر رہے ہیں ، جبکہ فلسطینی عیسائی بھی مسلمانوں کی طرح اسرائیل کے مظالم پر اعتراض کرتے ہیں۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ختم شد؍۱۰۳