نیویارک ٹائمز: ۴۵ ہزار سے زائد امریکی سابق فوجیوں نے خودکشی کی




نیویارک ٹائمز کے ایڈیٹوریل نے لکھا ہے کہ گذشتہ چھے برسوں میں ۴۵ ہزار سے زیادہ امریکی سابق فوجی یا امریکی فوج میں خدمات انجام دینے والے افراد خود کشی کر چکے ہیں۔



خیبر صہیون تحقیقاتی ویب گاہ کے مطابق، کیرول گیوکومو (Carol Giacomo) نے مزید کہا: خود کشی کی مجموعی شرح کو دیکھتے ہوئے روزانہ ۲۰ امریکی فوجی خودکشی کرتے ہیں جس سے معلوم ہوتا ہے کہ خودکشی کے ذریعے ہلاک ہونے والوں کی تعداد ان فوجیوں سے زیادہ ہے جو افغانستان اور عراق میں امریکی فوجی ہلاک ہوئے ہیں۔
نیویارک ٹائمز کے مطابق امریکی کنٹرول اینڈ ریفارم کمیٹی کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ ۲۰۰۵ سے ۲۰۱۶ تک کے عرصے میں ۱۸ سے ۳۴ سال کی عمر کے درمیان امریکی فوجیوں نے سب زیادہ خود کشی کی ہے۔
ماہرین کا خیال ہے کہ خودکشی ایک بہت پیچیدہ عمل ہے اور یہ بہت سے عوامل کی وجہ سے پیدا ہوتا ہے، جبکہ امریکی محکمہ دفاع کے عہدے داروں کا دعویٰ ہے کہ زیادہ تر خودکش حملہ آوروں کو کوئی زیادہ پریشانی یا نفسیاتی بیماری نہیں ہوتی ہے۔

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ختم شد/۱۰۳