50 ایم ایم توپ سے لیس گاڑی نے الخزامی کے قصر سعودی پر حملہ کیا تھا - خیبر

۵۰ ایم ایم توپ سے لیس گاڑی نے الخزامی کے قصر سعودی پر حملہ کیا تھا

24 اپریل 2018 09:59

آل سعود کے خاندان کے افراد يعنی بن سلمان اور ان کے چچا زاد بھائی کے درمیان فائرنگ کے تبادلے میں سات افراد مارے گئے ہیں اور بن سلمان کا ایک بھائی بھی زخمی ہؤا ہے۔

خیبر صیہون ریسرچ سینٹر: جاثیہ کے مطابق ٹویٹر پر آل سعود کے اندرونی حقائق افشا کرنے والے صارف “مجتہد” نے لکھا: مجھے موصولہ اطلاعات کے مطابق الخزامی میں سرکاری فورسز نے ۵۰ ایم ایم توپ سے لیس گاڑی کو نشانہ بنایا ہے اور بیشتر فائرنگ کا کوئی نشانہ نہ تھا۔ حملہ آور لاپتہ ہوگئے ہیں۔

مجتہد نے ٹویٹر پر لکھا کہ آل سعود کے قریبی حلقوں نے بھی اسی طرح کی خبریں ٹویٹ کی ہیں۔

صورت العرب نے لکھا تھا کہ آل سعود کے خاندان کے افراد يعنی بن سلمان اور ان کے چچا زاد بھائی کے درمیان فائرنگ کے تبادلے میں سات افراد مارے گئے ہیں اور بن سلمان کا ایک بھائی بھی زخمی ہؤا ہے۔

ایک سرکاری ذریعے نے نام نہ بتانے کی شرط پر بتایا ہے کہ حملے کا اصل نشانہ محمد بن سلمان تھے اور پس پردہ سعودی خاندان کے متعدد شہزادے ہیں۔

مجتہد نے اپنے تیسرے ٹویٹ میں لکھا: ممکن ہے کہ ایک ڈرون عمودی انداز سے اترا ہو۔ یا یہ ڈرون حملہ آوروں کو مدد پہنچانے کے لئے جاسوسی کے مقصد سے آیا ہو لیکن فائرنگ کا تعلق ڈرون سے نہیں تھا بلکہ دو فریقوں نے ایک گھنٹے تک ایک دوسرے پر گولیاں چلائی ہیں۔

یاد رہے کہ ریاض ایک فوجی چھاؤنی کی حیثیت رکھتا ہے اور مختلف فوجی اور سیکورٹی اداروں کے علاوہ بن سلمان کا دس ہزار افراد پر مشتمل خصوصی دستہ ان کے علاوہ ہے ایسے میں اس کیفیت کا ظہور پذیر ہونا بہت باعث حیرت ہے اس سے زیادہ باعث حیرت بادشاہ اور ولیعہد کا شہر سے فرار ہے اور اگر کبھی مزاحمت محاذ کا سامنا ہوا تو آل سعود کا کیا حال ہوگا۔

منبع: http://fa.alalam.ir/news/3512646

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

ختم شد/خ/ب/۲۰۲/ ۱۰۰۰۱

  • facebook
  • googleplus
  • twitter
  • linkedin
لینک خبر : https://kheybar.net/?p=1601

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے